عمران خان کے مخالفوں کے نام بگاڑنے اور القاب دینے پر چودھری شجاعت کی تنقید 97

عمران خان کے مخالفوں کے نام بگاڑنے اور القاب دینے پر چودھری شجاعت کی تنقید

عمران خان کے مخالفوں کے نام بگاڑنے اور القاب دینے پر چودھری شجاعت کی تنقید

لاہور (92 نیوز) – سابق وزیراعظم چودھری شجاعت حسین نے وزیراعظم عمران خان کے سیاسی لیڈروں کے نام بگاڑنے پر تنقید کی۔

 چودھری شجاعت حسین نے ردعمل دیتے ہوئے کہا ہے کہ وزیراعظم عمران خان ریاست مدینہ کی تو ہمیشہ بات کرتے ہیں لیکن اچھا ہوتا وہ قرآن پاک کی سورت الحجرات کی آیت نمبر گیارہ ترجمہ کے ساتھ پڑھ لیتے تو وہ اپنے جلسوں میں سیاسی لیڈروں پر الزامات لگانے کے ساتھ ساتھ انہیں برے ناموں اور القاب سے نہ پکارتے۔ اللہ تعالی نے کسی کو برے نام سے پکارنے اور تمسخر اڑانے سے منع کیا ہے۔ تمام سیاست دان شائستگی اور رواداری کا دامن نہ چھوڑیں۔

آیت کا مفہوم ہے ”اے ایمان والو! مرد دوسرے مردوں کا مذاق نہ اڑائیں ممکن ہے کہ ان سے بہتر ہو اور نہ عورتیں عورتوں کا مذاق اڑائیں ممکن ہے کہ یہ ان سے بہتر ہوں اور آپس میں ایک دوسرے پر عیب نہ لگاؤ اور نہ کسی کو برے لقب دو۔ ایمان کے بعد فسق برا نام ہے، جو توبہ نہ کریں وہی لوگ ظالم ہیں“



Source link

وسیم عباس
Author: وسیم عباس

وسیم عباس فری لانسر , جرنلسٹ , وی لاگر , کالم نگار , سوشل میڈیا ایکٹویسٹ ,خبریں ڈیلی کے ساتھ بطور ایڈمن منسلک ہیں انکا ٹویٹر اکاونٹ[email protected] کے ہینڈل سے ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں