بابر کے لیے کپتانی اور بیٹنگ کا الگ کرنا ضروری ہے، مہیلا جے وردھنے 9

بابر کے لیے کپتانی اور بیٹنگ کا الگ کرنا ضروری ہے، مہیلا جے وردھنے

سری لنکا کے سابق لیجنڈ بیٹسمین مہیلا جے وردھنے نے کہا ہے کہ بابر اعظم کی فارم کے لیے کپتانی اور بیٹنگ کو الگ کرنا ضروری ہے۔

تفصیلات کے مطابق مہیلا جے وردھنے نے آئی سی سی ریویو میں بتایا کہ جس طرح سے بابر پچھلے دو سالوں سے بیٹنگ کر رہے ہیں، اس کے لیے اس طرح کا ٹورنامنٹ ہونا تشویشناک ہے۔

مہیلا جے وردھنے نے کہا کہ لیکن مجھے لگتا ہے کہ وہ اب بھی ایک معیاری کھلاڑی ہے۔

آئی سی سی ریویو میں مہیلا نے کہا کہ شاید سارا دباؤ اس پر تھوڑا سا آ گیا، لیکن میں کہوں گا کہ وہ اب بھی معیار کے کھلاڑی ہیں۔

ریویو میں مہیلا کے مطابق پاکستان ایشیا کپ میں بلے سے بابر اعظم کی کمی محسوس کی کیونکہ رضوان اور وہ ایک بہت ہی مستقل اوپننگ جوڑی ہیں۔ اور پچھلے دو سالوں میں پاکستان کی کامیابیوں میں ان کی شراکت کا اہم کردار رہا ہے۔

مہیلا جے وردھنے کے مطابق پاکستان کے تمام بگ ہٹرز بیچ میں آتے ہیں، اسی لیے بابر اور رضوان اننگ کے آغاز میں ٹیم کو اچھا پلیٹ فارم مہیا کرنے کی ذمہ داری سنبھالتے ہیں۔

مہیلا نے کہا کہ یہی ذمہ داری ہے جس کا دباؤ بابر اعظم برداشت نہ کر سکے، مہیلا جے وردھنے نے کہا کہ تمام اچھے کھلاڑیوں پر یہ دور آتا ہے، مجھے یقین ہے کہ بابر اعظم اپنی فارم میں واپس آئے گا۔

جے وردھنے کے مطابق یہ صرف موقع اور حالات کا اثر تھا، آپ اسے ایشیا کپ ٹورنامنٹ سے دور کر دیں اور اسے دوسرے ٹورنامنٹ میں ڈالیں میں یقین سے کہتا ہوں کہ وہ مضبوطی سے واپس آئے گا کیونکہ معیار ہمیشہ اپنی جگہ بنا لیتا ہے۔

آئی سی سی ریویو میں مہیلا نے بتایا کہ بابر ایک ایسا کھلاڑی جس نے اپنے عروج کے زمانے میں بیٹنگ اور کپتانی دونوں کو جگایا، انہوں نے بابر اعظم کو دوہرے کردار سے نمٹنے کے لیے اچھا مشورہ بھی دیا۔

جے وردھنے نے کہا کہ یہ یقینی بنانا بہت ضروری ہے کہ پاکستانی کپتان آئی سی سی ٹی ٹوئنٹی ورلڈ کپ میں “غیر ضروری دباؤ” میں گھرے نہ ہوں۔

جے وردنے نے کہا کہ جب آپ کے پاس اس جیسا کوئی معیاری کھلاڑی ہو تو کوشش کریں اور اس پر دباؤ نہ ڈالیں۔ انہوں نے مزید کہا کہ مجھے یقین ہے کہ ایشیا کپ میں اس کی فارم اور اس سب کے بارے میں بہت بحث ہوئی ہوگی۔

مہیلا جے وردھنے کے مطابق کپتان ہونا اور آپ کی ٹیم کا بہترین بلے باز ہونا کوئی آسان کام نہیں ہے، یہ وہ چیز ہے جس پر اسے زندہ رہنا ہے۔

جے وردنے نے مزید کہا کہ بابر کے لیے کپتانی اور بیٹنگ کو الگ کرنا بہت ضروری ہے۔

<!––>



Source link

abdul aziz siddiqui
Author: abdul aziz siddiqui

Abdul Aziz Siddiqui Advocate ||Writer ||columnist at khabraindaily @Azizsiddiqui100 is senior lawyer and columnist from Karachi

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں