bill gates 119

کرونا وائرس کی وبا کب ختم ہوگی؟ بل گیٹس نے بتا دیا

ایک عرصے تک دنیا کے سب سے متمول رہنے والے شخص اور مائیکرو سافٹ کے شریک بانی بل گیٹس کا کہنا ہے کہ کووِڈ 19 کی عالم گیر وبا کا خطرناک مرحلہ 2022 میں‌ ختم ہو جائے گا۔

یہ بات انھوں نے اپنے بلاگ ‘گیٹس نوٹس’ میں کہی ہے، اس سے قبل بھی انھوں نے کرونا کی وبا کے خاتمے سے متعلق پیش گوئی کی تھی۔

اس حوالے سے انھوں نے لکھا کہ ایک اور پیش گوئی کرنا احمقانہ محسوس ہوگا لیکن میرا خیال ہے کہ وبا کا خطرناک مرحلہ اگلے برس میں کسی وقت ختم ہو جائے گا۔

ایک ایسے وقت میں جب کہ کرونا کے نئے ویرینٹ اومیکرون سے دنیا بھر میں تشویش پھیلی ہوئی ہے، بل گیٹس نے وبا کے خاتمے کی توقع کیوں ظاہر کی؟ اس سلسلے میں انھوں نے ویکسینز اور اینٹی وائرل ادویات کی تیاری کی رفتار کا ذکر کیا، اور کہا کہ اب جلد ہی کرونا ایک عام وبا یا مقامی مرض بن کر رہ جائے گا۔

بل گیٹس نے لکھا کہ وبا کا اب کوئی بھی مرحلہ ہو، دنیا وائرس کی خطرناک اقسام سے نمٹنے کے لیے بہتر طور پر تیار ہو چکی ہے، ضرورت پڑنے پر اب ہم اپ ڈیٹڈ ویکسینز تیار کرنے کے لیے بہتر پوزیشن میں ہیں۔

اس سے قبل دسمبر 2020 میں ایک انٹرویو میں بل گیٹس نے پیش گوئی کی تھی کہ یہ وائرس دنیا میں موجود رہے گا اور دنیا کے ہر کونے سے وائرس کے خاتمے کے بعد ہی وبا کا خاتمہ ممکن ہو سکے گا، اور حالات 2022 کی پہلی ششماہی سے قبل معمول پر نہیں آ سکیں گے۔

بل گیٹس نے لکھا کہ ویکسینز اور اینٹی وائرل ادویہ کی وجہ سے مستقبل میں کووِڈ 19 کے جان لیوا ہونے کی شرح میں کمی آ جائے گی، کبھی کبھار کسی جگہ پر کرونا کی لہر ابھرے گی لیکن بیش تر کیسز میں گھر میں علاج کے لیے نئی ادویات دستیاب ہوں گی۔

انھوں نے کہا کہ امریکا میں زندگی کے معمولات رواں سال موسم خزاں تک بحال ہو سکتے ہیں، مگر قانون سازوں کی جانب سے عالمی سطح پر ویکسینیشن کی ناکافی کوششوں کے باعث مکمل بحالی 2022 کے آخر تک ہی ممکن ہو سکے گی۔

یاد رہے کہ 2015 میں بل گیٹس نے کرونا جیسی وبا کی پیش گوئی کی تھی۔

وسیم عباس
Author: وسیم عباس

وسیم عباس فری لانسر , جرنلسٹ , وی لاگر , کالم نگار , سوشل میڈیا ایکٹویسٹ ,خبریں ڈیلی کے ساتھ بطور ایڈمن منسلک ہیں انکا ٹویٹر اکاونٹ[email protected] کے ہینڈل سے ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں