budget 87

کپتان کا عوام کے لیے بجٹ، کس کس کام کے لیے کتنا بجٹ رکھا گیاہے؟جانئیے

حکومت نے 8ہزار 487 ارب کا بجٹ پیش کر دیا
اسلام آباد(11جون 2021 خبریں ڈیلی ) وفاقی حکومت نے پارلیمنٹ میں ہنگامہ آرائی کے باوجود بجٹ پیش کر دیا۔ تفصیلات کے مطابق تنخواہ دار طبقے پر نیا ٹیکس نہیں لگایا گیا ہے۔ سرکاری ملازمین اور پینشن کی تنخواہوں میں دس فیصد اضافے کا امکان ہے۔ اس حوالے سے مزدور کی اجرت بھی بڑھادی گئی ہے۔ مزدور کی کم سے کم اجرت بیس ہزار روپے کردی گئی ہے۔

تنخواہ دار طبقے پر بھی کم بوجھ ڈالا گیا ہے۔ بڑے تاجروں کے لئے بڑی خوشخبریاں۔ اسٹاک ایکسچینج کے تاجروں پر ودہولڈنگ ٹیکس ختم کر دیا گیا ہے کیپٹل گین ٹیکس پندرہ سے ساڑھے بارہ فیصد کر دیا گیا ہے۔ چھوٹی اور الیکٹرک گاڑیاں سستی ہوگئی ہیں۔ 885 گاڑیوں پر فیڈرل ایکسائز ڈیوٹی ختم کر دی گئی ہے۔ مقامی گاڑیوں پر سیل ٹیکس 17 فیصد سے کم کر کے ساڑھے بارہ فیصد کر دیا گیا ہے۔ پہلے سے بننے والی گاڑیاں اور نئے ماڈل کو ایڈوانس ٹیکس سے مستثنی قرار دیا گیا ہے۔

حکومت میری گاڑی سکیم متعارف کروائے گی۔ موبائل فون پر ٹیکس ختم کر دیا گیا ہے۔ آئل،کتابیں اور سستے ہونگے۔ کریڈٹ اور ڈیبٹ کارڈ پر شاپنگ کرنے پر ٹیکس کم کر دیا گیا۔ مزید برآں بینک سے پیسے نکلوانے اور ڈالنے پر ٹیکس ختم کر دیا ہے۔ ہر گھرانے کو صحت کارڈ ملے گا۔ ٹریکٹر اور مشینری کے لیے کاشتکاروں کو بلا سود قرضے ملیں گے۔

وفاقی وزارتوں کو 672ارب روپے کا ترقیاتی بجٹ ملے گا۔ 382ارب کے نئے ٹیکس عائدکر دیے گئے ہیں۔ گریڈ 1 سے 5 تک کے ملازمین کے لیے انٹیگریٹڈ الاونس نو سو روپے کر دیا گیا ہے۔ ار دلی الاونس 14 ہزار سے بڑھا کر ساڑھے 17 ہزار کر دیا جائے گا۔ موبائل فون سستے لیکن کال پیکجز مہنگے تین منٹ سے زیادہ کال پر ٹیکس میں اضافہ ہوجائے گا۔ انٹرنیٹ کے پیکجز بھی بڑھیں گیں۔ موبائل فون پر ود ہولڈنگ ٹیکس کم کر کے 10 فیصد کر دیا گیا ہے۔ ٹیلی کام سیکٹر پر فیڈرل ایکسائز ڈیوٹی میں چھوٹ کا اعلان کر دیاہے۔ ٹیلی کام سیکٹر کو انڈسٹری کا درجہ دیا جائے گا۔

وسیم عباس
Author: وسیم عباس

وسیم عباس فری لانسر , جرنلسٹ , وی لاگر , کالم نگار , سوشل میڈیا ایکٹویسٹ ,خبریں ڈیلی کے ساتھ بطور ایڈمن منسلک ہیں انکا ٹویٹر اکاونٹ[email protected] کے ہینڈل سے ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں