Chinese recent argue about Taliban 77

چین نے طالبان کے ساتھ تعلقات اور حکومت کو قبول کرنے کا عندیا دے دیا

بیجنگ (خبریں ڈیلی) چینی وزارت خارجہ کا کہنا ہے کہ وہ افغانستان کی موجودہ صورتحال پر طالبان سے مذاکرات کرنے پر آمادہ ہیں۔ غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق چینی وزارت خارجہ کی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ چین افغان عوام کے اپنے مقدر کا تعین کرنے کے حق کا احترام کرتا ہے۔

انہوں نے کہا کہ وہ افغانستان کے ساتھ دوستانہ تعلقات اور باہمی تعاون کو فروغ مزید وسعت دینا چاہتے ہیں۔ واضح رہے کہ طالبان نے گزشتہ روز بھی افغان دارالحکومت کا کنٹرول سنبھال لیا تھا۔ اتوار کی صبح طالبان بغیر کسی مزاحمت کے کابل اور جلال آباد کا کنٹرول سنبھال لیا.

واضح رہے کہ چین اور افغانستان کی سرحد مشترک ہے اور ماضی میں بیجنگ کو خدشہ تھا کہ افغانستان ایغور علیحدگی پسندوں کا مرکز بن جائے گا۔

چین ماضی میں امریکہ سے افغانستان سے جلد بازی میں انخلاء شدید تنقید کر چکا ہے۔ اگرچہ طالبان حکومت نے ابھی تک اس کو تسلیم نہیں کیا ، تاہم چینی وزارت خارجہ کے ترجمان نے کہا کہ یہ ایک “سیاسی عسکری حقیقت” ہے۔

وسیم عباس
Author: وسیم عباس

وسیم عباس فری لانسر , جرنلسٹ , وی لاگر , کالم نگار , سوشل میڈیا ایکٹویسٹ ,خبریں ڈیلی کے ساتھ بطور ایڈمن منسلک ہیں انکا ٹویٹر اکاونٹ[email protected] کے ہینڈل سے ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں