fatf grey list 88

مودی سرکار کی کوششیں پاکستان گرے لسٹ میں رہے۔ پاکستان کے دعووں کی تصدیق

ایس جیشنکر نے کہا کہ نریندر مودی کی سربراہی میں بی جے پی حکومت نے اس بات کو یقینی بنایا ہے کہ پاکستان فنانشل ایکشن ٹاسک فورس (ایف اے ٹی ایف) کی ‘گرے لسٹ’ میں شامل رہے۔جیشنکر نے کہا ہماری وجہ سے پاکستان ایف اے ٹی ایف کے دائرے میں ہے اور اسے گرے لسٹ میں رکھا گیا ہے۔

اس نے یہ بھی کہاہم پاکستان پر دباؤ ڈالنے میں موثر رہے ہیں اور حقیقت یہ ہے کہ پاکستان کے طرز عمل میں تبدیلی آئی ہے جس کی وجہ بھارت نے کئی اقدامات کرکے دباؤ ڈالا ہے وزیرخارجہ نے اجلاس کے دوران لشکر طیبہ اور جیش محمد تنظیموں پر پابندیوں کے لئے اقوام متحدہ کے ذریعے ہندوستانی حکومت کی کوششوں کو بھی ذمہ دار قرار دیا (ایف او) نے پیر کو اس بات کا ذکر کیا کہ ہندوستانی وزیر خارجہ کے اس تقریر کی جس کی نریندر مودی حکومت نے پاکستان کو ضمانت دی تھی ۔

وہ فنانشل ایکشن ٹاسک فورس کی گرے لسٹ میں شامل ہے ، جس نے عالمی مالیاتی معاملے میں “ہندوستان کے منفی کردار سے متعلق پاکستان کے دیرینہ موقف ثابت کردیا ۔ واچ ڈاگ۔ایف او نے کہا کہ ہندوستان کے وزیر خارجہ کی تقریر میں ہندوستان کے “حقیقی رنگ اور نقلی کردار دکھائے گئے ہیں۔

پاکستان ہمیشہ بین الاقوامی برادری کو ایف اے ٹی ایف کی سیاست کرنے اور اس کی کارروائیوں کو ہندوستانی حکومت کی طرف راغب کرنے کی وضاحت کرتا رہا ہے۔ موجودہ ہندوستانی بیان پاکستان کے خلاف اپنے تنگ سیاسی منصوبوں کے لئے ایک اہم تکنیکی فورم کو استعمال کرنے کی کوششوں کی محض ایک اور توثیق ہےایف او بیان میں کہا گیا ہے کہ اگرچہ عملی منصوبے پر عمل درآمد کے دوران پاکستان اخلاص اور تعمیری طور پر ایف اے ٹی ایف کے ساتھ مصروف عمل رہا ہے۔

لیکن بھارت نے بدنام زمانہ ذرائع سے پاکستان کی پیشرفت پر شکوک و شبہات ڈالنے میں کوئی کسر نہیں چھوڑی اس میں کہا گیا ہے کہ پاکستان ایف اے ٹی ایف اور بین الاقوامی برادری کے نوٹس میں حالیہ اعتراف لا کر عالمی برادری کے سامنے ہندوستان کے کردار کو اجاگر کرتا رہے گا۔
اس میں یہ بات پوری کردی گئی کہ پاکستان اس معاملے میں مناسب کارروائی کے لئے مالی نگران سے رجوع کرنے کو بھی ذہن میں رکھے ہوئے ہندوستانی حکومت کے حالیہ اعتراف کے بعد مشترکہ گروپ کی شریک صدر کے طور پر ایف اے ٹی ایف میں پاکستان کا اندازہ لگانے کی ہندوستان کی اسناد یا اس معاملے میں کوئی دوسرا ملک سوالات کا نشانہ ہے ۔

جس پر ہم ایف اے ٹی ایف کو غور کرنے کی درخواست کرتے ہیں ایف او نے کہا کہ انسداد منی لانڈرنگ / دہشت گردی کی مالی اعانت کا مقابلہ کرنے میں پاکستان کی بے تحاشا کوششوں (ٹھوس اور قابل ترجیحی کارروائیوں) کے ذریعے قائم کی گئی تھی جس کا اعتراف ایف اے ٹی ایف نے بھی کیا تھا۔

ہم اپنے بین الاقوامی شراکت داروں کےمعاونت اور تعاون سے اس عزم اور رفتار کو برقرار رکھنے کے لئے پرعزم ہیں۔ بھارت کا پاکستان پر دباؤ ڈالنے کا وہ خیال ہمیشہ ہی ادھورا رہ گیا ہے اور اسے کبھی بھی روشنی نظر نہیں آئے گی
ایف او کے بیان میں کہا گیا ہے کہ کچھ دائرہ اختیارات کے ذریعہ ایف اے ٹی ایف کے عمل کو سیاسی بنانے سمیت خلفشار کے باوجود ، پاکستان اپنے بھلائی کے لئے بین الاقوامی معیار پر اپنے اے ایم ایل/ سی ٹی ایف نظام لانے اور اپنی بین الاقوامی ذمہ داریوں اور وعدوں کو پورا کرنے کے اپنے عہد کی توثیق کرتا ہے۔

وسیم عباس
Author: وسیم عباس

وسیم عباس فری لانسر , جرنلسٹ , وی لاگر , کالم نگار , سوشل میڈیا ایکٹویسٹ ,خبریں ڈیلی کے ساتھ بطور ایڈمن منسلک ہیں انکا ٹویٹر اکاونٹ[email protected] کے ہینڈل سے ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں