raja farqo haider and barrister sultan mehmod 113

نون لیگ اور پاکستان تحریک انصاف کا آزاد کشمیر میں دوسرے پر انتخابات میں اثر انداز ہونے کا الزام

راجہ فاروق حیدر کہتے ہیں کہ وفاقی حکومت آزاد کشمیر میں الیکشن کو ملتوی کر کے اپنی مرضی کے نتائج جاتی ہے دوسری جانب تحریک انصاف آزاد کشمیر کے صدر بیرسٹر سلطان محمود کہتے ہیں کہ آزاد کشمیر حکومت کے پاس اختیارات ہونے کی وجہ سے دھاندلی کر رہی ہے۔

وزیر اعظم آزاد کشمیر راجہ فاروق حیدر اور بیرسٹر سلطان محموداس میں دھاندلی کرنا چاہتی ہے۔ جبکہ الیکشن میں تاخیر یا ملتوی کا اختیار صرف اور صرف آزاد کشمیر اسمبلی کے پاس ہے۔

مزید کہا کہ میرے کرپٹ ارکان ہماری پارٹی کو چھوڑ کر پی ٹی آئی کو جوائن کر رہے ہیں اور آزاد کشمیر کبھی صوبہ نہیں بن سکتا۔ اس حوالے سے ان کا مزید کہنا تھا کہ حکومت گلگت بلتستان کی طرح الیکشن میں تاخیر کر کے اپنی مرضی کے نتائج حاصل کرنا چاہتی ہے۔

دوسری جانب تحریک انصاف آزاد کشمیر کے صدر بیرسٹر سلطان محمود نے آزاد کشمیر حکومت پر ری پولنگ کا الزام لگاتے ہوئے کہا کہ انہوں نےاختیارات کو ناجائز استعمال کرتے ہوئے بے شمار فنڈز سڑکوں کی صورت میں سکیموں کی صورت میں اور ویکینسیز کی صورت میں دیے ہیں۔ مزید کہا کہ وزیراعظم آزاد کشمیر نے اپنی شکست کو دیکھ کر بوکھلاہٹ کا شکار ہیں

تحریک انصاف حکومت بنا کر تمام کرپٹ عناصر کا احتساب کرے گی۔ اس حوالے سے این سی او سی نے کورونا کی صورتحال کو پیش نظر رکھتے ہوئے الیکشن کو دو مہینوں تک ملتوی کرنے کی تجویز دی ہے اور اس حوالے سے چیف الیکشن کمشنر آزادکشمیر کو خط بھی لکھا گیا ہے۔ مزید اس حوالے سے صدر مسلم لیگ نون نے وزیراعظم آزاد کشمیر سے ٹیلیفونک گفتگو کی اور خط کے حوالے سے دریافت کیا۔ کہا کہ جو آزاد کشمیر کا آئین و قانون کہتا ہے مسلم لیگ نون اس کے ساتھ کھڑی ہے

وسیم عباس
Author: وسیم عباس

وسیم عباس فری لانسر , جرنلسٹ , وی لاگر , کالم نگار , سوشل میڈیا ایکٹویسٹ ,خبریں ڈیلی کے ساتھ بطور ایڈمن منسلک ہیں انکا ٹویٹر اکاونٹ[email protected] کے ہینڈل سے ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں