81

پاکستان آرگنائزیشن فار دی پروہیبیشن آف کیمیکل ویپنز کی ایگزیکٹو کونسل کے لیے دوبارہ منتخب

یہ انتخابات 29 نومبر سے 2 دسمبر 2021 تک دی ہیگ میں منعقدہ ریاستی جماعتوں کی کانفرنس کے حال ہی میں ختم ہونے والے 26 ویں اجلاس کے دوران ہوئے۔

کیمیاوی ہتھیاروں کی ترقی، پیداوار اور ذخیرہ اندوزی اور ان کی تباہی سے متعلق کنونشن – جس میں 193 ریاستیں بطور رکن ہیں- تخفیف اسلحہ کا سب سے کامیاب معاہدہ ہے جس میں بڑے پیمانے پر تباہی پھیلانے والے ہتھیاروں کی ایک پوری کلاس کو ختم کیا جاتا ہے۔

ایگزیکٹو کونسل بنیادی پالیسی ساز ادارہ ہے، جو کنونشن کے مؤثر نفاذ اور اس کی تعمیل کی نگرانی کا ذمہ دار ہے۔

یہ کیمسٹری کے پرامن استعمال میں اپنے رکن ممالک کی سائنسی اور اقتصادی ترقی کی بھی حمایت کرتا ہے۔

پاکستان اس کا ایک فعال رکن ہے اور 1997 میں اس کی توثیق کے بعد سے ایگزیکٹو کونسل میں خدمات انجام دے رہا ہے۔

پاکستان اس کے مقاصد کی تکمیل کے لیے تعمیری کردار ادا کر رہا ہے اور اپنی متعلقہ سہولیات پر اس پلیٹفارم کے معمول کے معائنے کی باقاعدگی سے میزبانی کرتا ہے۔

۔-41رکنی ایگزیکٹو کونسل کے لیے پاکستان کا دوبارہ انتخاب میں پاکستان کے مثبت کردار کا منہ بولتا ثبوت ہے۔ یہ کے کام کو موثر -قیادت اور تحریک فراہم کرنے کی پاکستان کی صلاحیت پر رکن ممالک کے اعتماد کی تصدیق کرتا ہے۔

وسیم عباس
Author: وسیم عباس

وسیم عباس فری لانسر , جرنلسٹ , وی لاگر , کالم نگار , سوشل میڈیا ایکٹویسٹ ,خبریں ڈیلی کے ساتھ بطور ایڈمن منسلک ہیں انکا ٹویٹر اکاونٹ[email protected] کے ہینڈل سے ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں