fatf 99

۔27نکات پر عملدرآمد مکمل کرنے کے باوجود پاکستان کو گرے لسٹ میں رکھنے کا فیصلہ کیا گیا

پیرس: فنانشل ایکشن ٹاسک فورس (فیٹف) نے پاکستان کو ایک بار پھر گرے لسٹ میں رکھنے کا فیصلہ کرلیا ہے۔

پیرس میں ہونے والا فیٹف کا تین روزہ اجلاس اپنے اختتام کو پہنچ گیا، اجلاس میں پاکستان کے اقدامات کا جائزہ لیا گیا تاہم 27 نکات پر عملدرآمد مکمل کرنے کے باوجود پاکستان کو گرے لسٹ میں رکھنے کا فیصلہ کیا گیا۔

ایف اے ٹی ایف کے مطابق پاکستان نے کئی اقدامات کیے ہیں لیکن مزید اقدامات کی ضرورت ہے، پاکستان سے متعلق فیصلہ اتفاق رائے سے کیا۔

ایف اے ٹی ایف کے صدر مارکس پلیئر نے بریفنگ میں کہا کہ منی لانڈرنگ کی روک تھام کے لیے مشترکہ کوششیں کر رہے ہیں، منی لانڈرنگ کی روک تھام میں پنڈورا پیپرز نے بھی معاونت کی۔
فیٹف اجلاس کے حوالے سے وزارت خزانہ نے اعلامیہ جاری کردیا ہے جس میں کہا گیا ہے کہ اجلاس میں پاکستان کے حوالے سے صورتحال کچھ عرصہ کے لیے جوں کی توں رکھنے کا فیصلہ ہوا

دونوں ایکشن پلانز کے بقایا نکات پر عملدرآمد کے لیے کافی کام کیا جا چکا ہے، فیٹف پاکستان کی پیشرفت کا اگلا جائزہ فروری 2022ء میں لے گا۔

دوسری جانب ذرائع کا کہنا ہے کہ فیٹف نے پاکستان کی کمپپلائنس رپورٹ کو تسلیم نہیں کیا، پاکستان کو مزید کچھ عرصے کے لیے گرے لسٹ میں رکھا جا ئے گا۔

وسیم عباس
Author: وسیم عباس

وسیم عباس فری لانسر , جرنلسٹ , وی لاگر , کالم نگار , سوشل میڈیا ایکٹویسٹ ,خبریں ڈیلی کے ساتھ بطور ایڈمن منسلک ہیں انکا ٹویٹر اکاونٹ[email protected] کے ہینڈل سے ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں