nawaz sharif 67

نواز شریف کے جعلی ویکسینیشن کیس میں دو سینئر افسران معطل

سابق وزیراعظم نواز شریف کی جعلی ویکسینیشن اندراج سے متعلق ہسپتال انتظامیہ کی غفلت کی وجہ سےپنجاب حکومت نے میڈیکل سپرنٹنڈنٹ (ایم ایس) اور لاہور کے کوٹ خواجہ سعید ہسپتال کے ایک سینئر ڈاکٹر کو معطل کردیا-

تفصیلات کے مطابق دونوں افسران کو ہدایت کی گئی ہے کہ وہ محکمہ صحت کو رپورٹ کریں۔وفاقی تحقیقاتی ایجنسی (ایف آئی اے) اور پولیس نے اس سلسلے میں الگ الگ مقدمات درج کیے ہیں۔

یہ بھی پڑھیے؛ برطانیہ میں چھوٹے بچے نے نواز شریف کا جینا حرام کر دیا، ویڈیو وائرل

مقدمہ کے اندراج کے بعد ایف آئی آر میں نامزد دو ملازمین کو گرفتار کیا گیا ہے۔ایف آئی اے سائبر کرائم ونگ کی جانب سے شیئر کی گئی تفصیلات کے مطابق چوکیدار ابوالحسن اور وارڈ بوائے عادل نے تیسرے ملازم نوید کی شناخت کو استعمال کرتے ہوئے سابق وزیر اعظم نواز شریف کی سسٹم میں جعلی اندراج کیا۔

پولیس نے تینوں ملزمان کے خلاف مقدمات درج کر کے ابوالحسن اور عادل کو گرفتار کر لیا ہے۔اس کے علاوہ نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سینٹر (این سی او سی) نے پنجاب کے سیکرٹری صحت کو اسلام آباد طلب کیا ہے۔

صوبائی صحت کے حکام نے اس تنازعہ سے متعلق ایک رپورٹ تیار کی ہے اور اسے وزیراعلیٰ عثمان بزدار کے ساتھ شیئر کیا ہے ، جس میں ہسپتال کے مانیٹرنگ اور نگرانی کے نظام میں خرابیوں کو اجاگر کیا گیا ہے۔رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ ہسپتال کے چار ملازمین نے نواز شریف کے ڈیٹا کی جعلی اندراج کا اعتراف کیا ہے۔

وسیم عباس
Author: وسیم عباس

وسیم عباس فری لانسر , جرنلسٹ , وی لاگر , کالم نگار , سوشل میڈیا ایکٹویسٹ ,خبریں ڈیلی کے ساتھ بطور ایڈمن منسلک ہیں انکا ٹویٹر اکاونٹ[email protected] کے ہینڈل سے ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں