budget 83

‏پنجاب کا آئندہ مالی سال 22-2021 کا بجٹ آج پیش کیا جائے گا

پنجاب کے آئندہ مالی سال کا بجٹ 2 ہزار 653 ارب روپے ہوگا۔پنجاب کا ترقیاتی بجٹ 560 ارب روپے ہوگابجٹ گزشتہ مالی سال کے 337 ارب کے بجٹ سے 66 فیصد زائد ہے۔تریمو بیراج اور پنجند ہیڈورکس کیلئے 16.8 ارب رکھنے کی تجویز دی گئی ہے۔

ڈویژنل ہیڈکوارٹرز میں پناہ گاہوں کی تعمیر کیلئے 523.2 ملین رکھنے کی تجویز دی گئی ہے۔ریٹائرڈ ملازمین کی پنشن میں 10 فیصد اضافہ متوقع ہے۔‏سرکاری ملازمین کا 25 فیصد اسپیشل الاؤنس الگ ہوگا۔گرین پنجاب کے لیے 9 ارب روپے رکھے جائیں گے۔

زرعی اکانومی ٹرانسفار میشن پلان کیلئے 39.5 ارب مختص کرنے کی تجویز دی گئی ہے۔25 لاکھ کم لاگت ہاؤسنگ یونٹس آئندہ بجٹ کا حصہ ہوں گے۔ڈسٹرکٹ ڈویلپمنٹ پروگرام کیلئے 360 ارب روپے رکھے جانے کا امکان ہے۔انفرا اسٹرکچر سیکٹر کیلئے 39.8 فیصد کا اضافہ، جس میں173.8 ارب رکھے جائیں گے۔رورل اکانومی بجٹ میں 57 فیصد اضافہ، 96.8 ارب رکھنے کی تجویز دی گئی ہے۔

اس کے علاوہ وزیراعلی پنجاب نے پنجاب میں موجود مختلف دھڑوں کو منا لیا ہے ۔اس سے قبل انھوں نے صوبائی اسمبلی کے ارکان کے اعزاز میں عشائیہ بھی دیا گیا۔ جنوبی پنجاب محاذ گروپ اور ترین گروپ کا مکمل بجٹ میں ساتھ دینے کا اعلان۔

وسیم عباس
Author: وسیم عباس

وسیم عباس فری لانسر , جرنلسٹ , وی لاگر , کالم نگار , سوشل میڈیا ایکٹویسٹ ,خبریں ڈیلی کے ساتھ بطور ایڈمن منسلک ہیں انکا ٹویٹر اکاونٹ[email protected] کے ہینڈل سے ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں