کویت کا ‘ بوسٹر ڈوز ‘ سے متعلق بڑا اعلان

کویت سٹی: عالمی وبا کرونا کے خلاف جنگ میں کویت بھی یورپی ممالک کے ہم پلہ آگیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق کویت کے وہ شہری جنہوں نے کووڈ نائنٹین کے خلاف ویکسین کی “آکسفورڈ آسٹرا زینیکا” خوراکیں حاصل کی ہیں انہیں ‘فائزر’ بوسٹر خوراک دی جائے گی۔
ذرائع صحت کے مطابق ویکسین تصدیق کرنے والے متعلقہ صحت کے حکام کی طرف سے کئے گئی ریسرچ کی بنیاد پر آسٹرازینیکا کی دو خوارکیں لینے والے افراد کو فائزر کی تیسری خوراک بطور ‘بوسٹر’ دینا محفوظ اور موثر قرار دیے دیا گیا ہے۔

روزنامہ الجریدہ کی شائع ہونے والی رپورٹ کے مطابق بیشتر یورپی ممالک میں ایسا کیا جا رہا ہے۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ جن لوگوں نے چھ ماہ سے زائد عرصے پہلے “آکسفورڈ” ویکسین حاصل کی تھی انہیں نومبر یا دسمبر میں فائزر بوسٹر خوراک دی جائے گی جو کرونا کے خلاف امیونٹی سسٹم کو مزید کارآمد بناۓ گی۔دوسری جانب وزارت صحت کویت نے ملک کے بیشتر علاقوں کے لیے ایک جامع فیلڈ ویکسی نیشن مہم شروع کرنے کا اعلان کیا ہے، یہ مہم ان تمام گروپوں کو اپنی خدمات فراہم کرے گی جو کسی بھی وجہ سے ویکسی نیشن یا رجسٹریشن حاصل نہیں کرسکے تھے۔

یاد رہے کہ گذشتہ ماہ کویت کے وزیر صحت شیخ ڈاکٹر باسل الصباح کا کہنا تھا کہ کویت میں زندگی معمول پر آگئی ہے انہوں نے عوام سے سوال کیا کہ ملک میں ایسی کون سی جگہ ہے جہاں آپ نہیں جا سکتے؟ یا کہاں زندگی معمول پر نہیں آئی ہے؟۔

کویتی وزیر صحت کا کہنا تھا کہ ہم ان چند خوش قسمت ممالک میں سے ایک ہیں جہاں عام زندگی کی رونقیں لوٹ آئی ہیں، انہوں نے اس بات پر زور دیا کہ ملک میں زندگی ایک بہترین طریقے سے جا رہی ہے اور ویکسی نیشن کا عمل اب بھی ایک بہترین طریقے سے رواں دواں ہے اوریہاں ہر چیز دستیاب ہے۔

x