fight in national assembly 76

قومی اسمبلی کا بجٹ اجلاس ایوان میں مسلسل ہنگامہ آرائی دنیا بھر میں جگ ہنسائی

اسلام آباد میں مسلسل دو روز میں قومی اسمبلی کے ہونے والے بجٹ اجلاس میں اپوزیشن لیڈر شہباز شریف کی تقریر مکمل نہ ہو سکی۔ تفصیلات کے مطابق اراکین قومی اسمبلی نے ایک دوسرے پر آوازیں کسنا شروع کر دیں۔ مزید برآں ایک دوسرے کو کتابیں ماریں گئیں اور ہنگامہ برپا گیا۔علی نواز عوان نے غصے میں آکر ن لیگ کے روحیل اصغر کو کتاب ماردی۔جواب میں مسلم لیگ ن کے ارکان نے بھی کتابیں مارنا شروع کردیں اور پاکستان تحریک انصاف کی راہنما ملیکہ بخاری کی آنکھ کتاب لگنے سے زخمی ہوگئی۔

اس حوالے سے سپیکر اسد قیصر نے سخت فیصلے کرتے ہوئے پاکستان تحریک انصاف کے رہنما علی نواز اعوان سمیت کئی ارکان کی پارلیمنٹ میں آمد پر پابندی لگا دی۔ قومی اسمبلی میں ہنگامہ آرائی پر پی ٹی آئی بھی متحرک ہو گئی ہے۔ تحریک انصاف کی پارلیمانی کمیٹی کا اجلاس آج ہوگا اتحادی حکام بھی شریک ہوں گے۔ پارلیمنٹ کو چلانے سمیت بجٹ امور پر مشاورت ہوگی۔ پارلیمنٹ کی کارروائی منظم انداز میں کیسے آگے بڑھائی جائے؟ حکومت اور اپوزیشن میں رابطہ کیا گیا۔

اسپیکر اسد قیصر کی ہدایت پر چار رکنی کمیٹی کی ملاقات۔ حزب اختلاف کا بات چیت آگے بڑھانے سے گریز۔ مشاورت کے لئے بھی وقت مانگ لیا ہے۔ دوسری طرف اپوزیشن نے اسد قیصر کے خلاف تحریک عدم اعتماد لانے کا اصولی فیصلہ کر لیا ہے۔ اسد قیصر ایوان چلانے کی اہلیت کھو چکے ہیں۔ اپوزیشن نے مشترکہ مراسلہ جاری کر دیا۔ مزید برآں اپوزیشن نے اسپیکر اسد قیصر پر جانبداری کا الزام لگایا اور پندرہ جون کو جمہوریت کا سیاہ ترین دن قرار دیا۔

وسیم عباس
Author: وسیم عباس

وسیم عباس فری لانسر , جرنلسٹ , وی لاگر , کالم نگار , سوشل میڈیا ایکٹویسٹ ,خبریں ڈیلی کے ساتھ بطور ایڈمن منسلک ہیں انکا ٹویٹر اکاونٹ[email protected] کے ہینڈل سے ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں