Hindu temple attack 60

قومی اسمبلی میں مندر حملے کے خلاف مذمتی قرارداد متفقہ طور پر منظور

اسلام آباد (خبریں ڈیلی ) قومی اسمبلی کے اجلاس میں علی محمد نے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ مندر حملے کی جتنی مذمت کی جائے کم ہے۔ واقعے کی تمام علماء کرام اور وزیراعظم عمران خان نے مذمت کی ہے۔ پورا ملک اقلیتوں کے ساتھ ہمدردی کا اظہار کرتا ہے۔ دوسری جانب وفاقی وزیر اطلاعات نے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان بھارت نہیں ۔یہاں اقلیتیں ہرطرح سے محفوظ ہیں۔ مندر میں ملوث افراد کو ضرور سزا ملے گی۔ وزیر اعظم اور اعلی عدلیہ نے واقعہ کا نوٹس لیا ہے۔ دوسری جانب سپریم کورٹ کا رحیم یار خان میں مندر حملہ کیس میں ملوث افراد کو فوری گرفتار کرنے کا حکم دے دیا ہے۔ شدت پسندی پر اکسانے والوں کے خلاف کارروائی کا حکم دیا ہے۔ اس کے علاوہ حکم دیا کہ مندر کی بحالی کی رقم بھی ملزمان سے وصول کی جائے۔ ازخود کیس میں چیف سیکرٹری پنجاب اور آئی جی پنجاب کی سرزنش کی گئی۔ چیف جسٹس نے سخت ریمارکس دیتے ہوئے کہا کہ پولیس نے تماشا دیکھنے کے علاوہ کچھ نہیں کیا۔ انتظامیہ کو فارغ کریں۔ کمشنر اور ڈی پی او کام نہیں کر سکتے تو عہدے سے ہٹا دیں۔

وسیم عباس
Author: وسیم عباس

وسیم عباس فری لانسر , جرنلسٹ , وی لاگر , کالم نگار , سوشل میڈیا ایکٹویسٹ ,خبریں ڈیلی کے ساتھ بطور ایڈمن منسلک ہیں انکا ٹویٹر اکاونٹ[email protected] کے ہینڈل سے ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں